farhan ali qadri
Home | Video | Audio | Albums | Latest Album | Gallery | Forum | Guest Book | Search | Tell A Friend | Contact
Title Bookmark and Share farhan ali qadri


Farhan Ali Qadri - نہ ہو آرام جس بیمار کو
        Urdu Lyric
  Audio  Roman  Hindi  Urdu

نہ ہو آرام جس بیمار کو

نہ ہو آرام جس بیمار کو سارے زمانے سے
اُٹھا لے جائے تھوڑی خاک اُنکے آستانے سے
تُمھارے در کے ٹکڑوں سے پڑا پلتا ہے اک عالم
گزارا سب کا ہوتا ہے اِسی مُحتاج خانے سے
کوئی فردوس ہو یا خُلد ہو ہم کو غرض مطلب
لگایا اب تو بستر آپ ہی کے آستانے سے
نہ کیوں اُن کی طرف اللہ سو سو پیار سے دیکھے
جو اپنی آنکھیں ملتے ہیں تمھارے آستانے سے
تمھارے تو وہ احساں اور نافرمانیاں اپنی
ہمیں تو شرم سی آتی ہے تم کو منہ دکھانے سے
بہارِ خُلد صدقے ہو رہی روئے عاشق پر
کھلی جاتی ہیں کلیاں دل کی تیرے مُسکرانے سے
زمیں تھوڑی سی دے دے بہرِ مدفن اُن کے کوچے میں
لگا دے میرے پیارے میری مٹی بھی ٹھکانے سے
پلٹتا ہے جو ظاہر اس سے کہتا ہے نصیب اس کا
ارے غافل قضا بہتر یہاں سے پھر کے جانے سے
بلا لو اپنے در پر اب تو ہم خانہ بدوشوں کو
پھریں کب تک ذلیل و خوار در در بے ٹھکانے سے
نہ پہنچے ان کے قدموں تک نہ کچھ حُسنِ عمل ہی ہے
حسن کیا پوچھتے ہو ہم گئے گزرے زمانے سے
نہ ہو آرام جس بیمار کو سارے زمانے سے
اُٹھا لے جائے تھوڑی خاک اُنکے آستانے سے



Copyright © 2007 - 2017 - Powered by Net is Host